مختاران مائی کیس

مختارراں مائی کے کیس میں اٹارنی جنرل نے افسانوی رخ اختیار کیا ۔ نمعلوم اس سے کیس کو قانونی طور پر فائدہ ہو گا یا نقصان ۔ دراصل اس کیس کو پہلے تو پولیس نے ایف آئی آر درج نہ کر کے نقصان پہنچایا اور پھر کچھ این جی اوز نے بشمول اسماء جہانگیر اس کو بجائے بطور لیگل کیس مضبوط کرنے کے اپنی دکان چمکانے کے لئے ایک سیا سی مسئلہ بنا کر مزید نقصان پہنچایا ۔ اس دوران کئی کارآمد شہادتیں ضائع ہو گئیں ۔

اب بھی اگر حکومت یا پولیس چاہے تو جرگہ میں موجود افراد میں سے کچھ کو صحیح اور سچے بیانات دینے پر مجبور کر سکتی ہے مگر اس کے لئے ان گواہوں اور ان کے خاندانوں کو مکمل اور دیرپا تحفظ فراہم کرنا ہو گا ۔ فوری طور پر تیرہ کے تیرہ ملزموں گرفتار کرنا پہلا قدم ہو گا ۔ اگر اس میں کسی بھی وجہ سے تاخیر ہوئی تو کیس کی صحت کے لئے اچھا نہ ہو گا ۔

Advertisements

3 thoughts on “مختاران مائی کیس

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s