فلسطین ۔ نقشے کی تبدیلیاں


میں نے اپنی 22 نومبر کی تحریر میں خفیہ معاہدے سائیکس پیکاٹ کا ذکر کیا تھا اس میں مندرجہ ذیل فیصلہ ہوا تھا اور یہ اس تقسیم کا نقشہ ہے

The Sykes-Picot agreement was a secret understanding concluded in May 1916, during World War I, between Great Britain and France, with the assent of Russia, for the dismemberment of the Ottoman Empire. The agreement led to the division of Turkish-held Syria, Iraq, Lebanon, and Palestine into various French and British-administered areas. The agreement took its name from its negotiators, Sir Mark Sykes of Britain and Georges Picot of France.

ميں نے اپنی 30 نومبر کی تحریر میں ذکر کیا تھا

کہ 29 نومبر 1947 کو یو این جنرل اسمبلی نے

ایک قرارداد منظور کی تھی

اس کے مطابق فلسطین اور اسرائیل کا نقشہ یہ تھا ۔

اسرائیل نے 1948 میں بیت المقدّس کے مغربی حصہ اور کچھ

دوسرے علاقوں پر قبضہ کر لیا اور اسرائیل کا یہ نقشہ بنا لیا ۔

Advertisements